Qasas ul Quran – Hazrat Ismael (Part 10) LAST

data-full-width-responsive="true">

حضرت اسماعیل علیہ السلام ۔ پارٹ 10

 

بیت اللہ تعمیر ہوگیا تو اللہ پاک نے حضرت ابراہیم علیہ السلام کو بتایا کہ یہ ملت ابراہیمی کے لئے قبلہ اور ہمارے سامنے جھکنے کا نشان ہے۔ اس لئے یہ توحید کا مرکز قرار دیا جاتا ہے۔
تب ابراہیم اور اسماعیل علیہ السلام نے دعا مانگی کہ اللہ ان کو اور ان کی آل کو نماز اور زکوۃ قائم کرنے والا بنائے اور استقامت عطا کرے اور پھلوں، میوں اور رزق میں برکت دے۔ اور انسانیت کو متوجہ کرے کہ وہ یہاں حج کے لئے آئیں۔

البقرہ ۔ 129 ۔ 125

جب دونوں بیت اللہ کی تعمیر کر رہے تھے تو ابراہیم علیہ السلام کی زبان پر مستقل یہ دعا تھی کہ اے اللہ! ہمارا یہ عمل صرف تیرے لئے ہے۔ اور ہماری نسل میں سے ایک امت پیدا کر جو تیرے حکموں پر عمل کرے۔ اور اس (عرب) بستی میں اپنا ایک رسول بھیج۔ جو انہی میں سے ہو اور تیری آیت سب کو پڑھ کر سنائے۔
البقرہ ۔ 129۔ 127

اسی دعا کی طرف اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ والہ وسلم اشارہ کرتے فرماتے ہیں کہ میں اپنے والد ابراہیم علیہ السلام کی دعاکا نتیجہ ہوں۔

تورات کے مطابق اسماعیل علیہ السلام کے 12 بیٹے اور 1 بیٹی تھی۔ اور یہ اپنی امتوں کے 12 رئیس تھے۔ 2 بیٹے نبات اور قدار مشہور ہیں۔ نبات کی نسل اصحاب الحجر اور قدار کی نسل اصحاب الراس کہلائی۔
اسماعیل علیہ السلام نے 136 سال کی عمر میں وفات پائی۔ اور ان کی نسل کا سلسلہ حجاز، شام، عراق، فلسطین اور مصر تک پھیلا۔
سورہ مریم 55۔ 54 میں اللہ نے انہیں


وعدے کا سچا


رسول


نبی


اپنے اہل اور عیال کو نماز اور زکوۃ کا حکم دینے والا اور


اپنا پسندیدہ قرار دیا ہے۔۔۔

ہماری اگلی کہانی حضرت اسحٰق علیہ السلام۔۔۔۔

 

 

Click Here For Qasas ul Quran All Parts

data-full-width-responsive="true">

Check Also

Hayrat Angaaz Report in Urdu

data-full-width-responsive="true"> data-full-width-responsive="true">