Qasas ul Quran – Hazrat Yusuf (Part 4)

data-full-width-responsive="true">

حضرت یوسف علیہ السلام ۔ پارٹ 4

 

یعقوب علیہ السلام اپنے بیٹوں کی خیانت سے واقف تھے کہ وہ یوسف علیہ السلام کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔ لیکن وہ ظاہر نہیں کرنا چاہتے تھے تاکہ سب اعلانیہ دشمنی پر نہ اتر آئیں۔ ساتھ ھی اندیشہ بھی ظاہر کیا کہ۔۔۔۔
مجھے اس سے رنج پہنچتا ہے کہ تم اس کو اپنے ساتھ لے جاؤ اور مجھے خوف ہے کہ اس کو بھیڑیا کھا جائے اور تم غافل رہو۔

وہ سب بولے۔۔۔

اگر ہم طاقتور گروہ کے ہوتے ہوئے اس کو بھیڑیا کھا جائے تو بلاشبہ ہم نے تو سب کچھ گنوا دیا۔
یوسف ۔ 14۔ 13

اب برادران یوسف علیہ السلام ان کو جنگل کی سیر کرانے کے بہانے لے گئے اور مشورے کے مطابق ایک ایسے کنویں میں ڈال دیا ان کو جو عرصے سے خشک پڑا تھا۔
واپسی میں ان کی قمیص کو کسی جانور کے خون سے تر کر کے روتے ہوئے یعقوب علیہ السلام کے پاس لائے اور کہنے لگے ابا جان! اگرچہ ہم اپنی صداقت کا کتنا ہی یقین دلائیں مگر آپ کو ہرگز یقین نہ آئے گا کہ ہم دوڑ میں ایک دوسرے سے آگے نکلنے میں مشغول تھے کہ اچانک یوسف کو بھیڑیا اٹھا لے گیا۔

یعقوب علیہ السلام نے یوسف علیہ السلام کا خون آلود کرتا تو دیکھا لیکن کہیں سے پھٹا ہوا نہ پایا تو فوراً حقیقت حال سمجھ گئے لیکن نفرت اور حقارت کے بجائے پیغمبرانہ علم اور فراست کے ساتھ بتا دیا کہ باوجود حقیقت حال کو چھپانے کی کوشش کے، تم لوگ چھپا نہ سکے۔

ایسا ہرگز نہیں بلکہ تم سب نے اپنی طرف سے یہ بات بنا لی ہے۔ اور صبر بہتر ہے۔ اور جو بات تم ظاہر کرتے ہو اس پر میں اللہ سے مدد مانگتا ہوں۔
یوسف ۔ 18

کنویں میں تنہا یوسف علیہ السلام کو اللہ نے پہلے ہی دلی اطمینان دے دیا تھا۔ اسی اثنا میں حجاز کا ایک قافلہ شام سے مصر جا رہا تھا کہ کنواں دیکھ کر پانی کے لئے ڈول ڈالا۔ یوسف علیہ السلام ڈول پکڑ کر لٹک گئے۔ تاجر نے اتنے حسین بچے کو دیکھ کر شور مچایا۔

قرآن کے مطابق انہوں نے کہا۔

بشارت ہو ایک غلام ہاتھ آیا۔۔۔

سورہ یوسف ۔ 19

اب وہ انہیں اپنے ساتھ ہی بازار مصر لے گئے۔
ایک معصوم سا بچہ جسے اپنے والد کی محبت اور ملک سب چھوٹا۔ بڑے بھائیوں نے اتنا ظلم کیا اور اب وہ ایک غلام ہے۔ لیکن کہیں کوئی واویلا نہیں۔ بس صبر اور توکل کی انتہا۔۔۔۔۔

جاری ہے۔۔۔

 

 

 

Click Here For Qasas ul Quran All Parts

data-full-width-responsive="true">

Check Also

Hayrat Angaaz Report in Urdu

data-full-width-responsive="true"> data-full-width-responsive="true">