Qasas ul Quran – Hazrat Yusuf (Part 9)

data-full-width-responsive="true">

حضرت یوسف علیہ السلام ۔ پارٹ 9

 

عزیز کی بیوی نے مزید بتایا کہ بیشک میں نے اس کے دل پر قابو پانا چاہا تھا لیکن وہ بے قابو نہ ہوا۔ لیکن یہ طے ہیکہ اگر اس نے میرا کہا نہ مانا تو وہ قید میں جا کر رہے گا اور بے عزتی سہے گا۔۔

یوسف علیہ السلام کو جب یہ سب پتا چلا اور عزیز کی بیوی کے علاوہ سب عورتوں کے برے ارادے اپنے بارے میں دیکھے تو اللہ کے حضور دعا کی کہ یا رب! جس بات کی طرف یہ عورتیں بلا رہی ہیں اس کے مقابلے میں مجھے قید منظور ہے۔ میری مدد فرما۔۔

سورہ یوسف ۔ 33 ۔ 30

اب یوسف علیہ السلام کی دعا قبول ہوئی اور اللہ عزوجل نے انہیں عورتوں کے مکر اور فریب سے بچا لیا۔ قید میں جانا انکے لئے اس وقت ہر لحاظ سے بہتر تھا۔
عزیز مصر پر ان کی صداقت ظاہر تو ہو ہی چکی تھی اور وہ انہیں تکلیف دینا بھی نہیں چاہتے تھے، مگر اپنی بیوی کا عشق میں برا حال، پورے شہر میں بدنامی اور یوسف علیہ السلام کے خلاف اس کے برے ارادے دیکھ کر عزیز کو یہی بہتر لگا کہ یوسف علیہ السلام کو کچھ عرصہ قید کی صورت میں محفوظ رکھا جائے۔۔

اب یوسف علیہ السلام کو مجرم بنا کر قید خانے بھیج دیا گیا۔۔ تاکہ عزیز کی مجرم بیوی کو مجرم نہ کہا جاسکے۔۔۔ لیکن یوسف علیہ السلام نے شکوہ نہ کیا کیونکہ ان کے نزدیک ان کا پاکیزہ کردار سب سے اہم تھا۔۔

تورات اور قرآن مجید سے بھی یہ معلوم ہوتا ہیکہ قید خانے میں بھی ان کا علمی اور عملی کردار نہ چھپ سکا۔ اورقید خانے کے داروغہ نے بھی انہیں کھلی آزادی دے رکھی تھی۔ تبھی تو قیدیوں کا ان کے پاس آنا جانا تھا اور ان کے پاک اوصاف کی کافی شہرت تھی۔۔۔

جاری ہے۔۔۔۔

 

 

Click Here For Qasas ul Quran All Parts

data-full-width-responsive="true">

Check Also

Hayrat Angaaz Report in Urdu

data-full-width-responsive="true"> data-full-width-responsive="true">