Qasas ul Quran – Hazrat Yusuf (Part 12)

data-full-width-responsive="true">

حضرت یوسف علیہ السلام ۔ پارٹ 12

 

بادشاہ کو درباریوں کے جواب سے اطمینان نہ ہوا۔ کہ اسی دوران ساقی کو اپنا خواب اور یوسف علیہ السلام یاد آیا۔ اس نے بادشاہ سے مہلت مانگی کہ میں اس کی تعبیر لا سکتا ہوں۔ اجازت ملتے ہی وہ قید خانے میں پہنچا اور کہا کہ بیشک آپ سچے ہیں، آپ ہی اس کو حل کر سکتے ہیں۔ جب میں تعبیر لے جا کر سب کو حیران کر دونگا تو سب آپ کی حقیقی قدر ضرور معلوم کر لیں گے۔
یوسف علیہ السلام نے ساقی پر نہ تو غصہ کیا نہ بادشاہ کو ملامت۔
یوسف علیہ السلام نے اس خواب کی تعبیر بتائی۔
کہا تم کھیتی کرو گے 7 سال جم کر سو جو کاٹو اس کو ان کی بالوں میں رہنے دو، مگر تھوڑا سا جو تم کھاؤ۔ پھر اس کے بعد 7 سال سختی کے آئیں گےجو تمہارا سارا غلہ ختم کر دیں گے۔ پھر ایک سال آئیگا جس میں خوب بارش برسے گی لوگوں پر اور سب خوب رس نچوڑیں گے (پھلوں میں سے)۔
سورہ یوسف : 49 ۔ 47

تعبیر سنتے ہی بادشاہ لاجواب ہو گیا۔ اور اس علم اور دانش اور جلال کا ایسا قائل ہو گیا کہ اسے یوسف علیہ السلام سے فوراً ملنے کا اشتیاق پیدا ہوگیا۔

بادشاہ کا پیغام جب یوسف علیہ السلام کے پاس پہنچا تو بجائے اس کے کہ وہ پھولے نہ سماتے انہوں نے دربار میں حاضر ہونے سے انکار کر دیا۔ اور فرمایا اس طرح میں جانے کو تیار نہیں۔ تم اپنے بادشاہ کے پاس جاؤ اور کہو وہ تحقیق کریں اس بات کا کہ ان عورتوں کا معاملہ کیا تھا جنہوں نے اپنے ہاتھ کاٹے تھے؟
پہلے یہ بات واضح ہو جائے کہ انہوں نے کیسی مکاریاں کی تھیں۔ اور میرا رب خوب واقف ہے۔ یوسف علیہ السلام نے اس حال میں بھی عزیز کی لاج رکھ لی۔ اور اس کی بیوی کا نام نہ لیا۔۔

جاری ہے۔۔۔۔

 

 

 

Click Here For Qasas ul Quran All Parts

data-full-width-responsive="true">

Check Also

Hayrat Angaaz Report in Urdu

data-full-width-responsive="true"> data-full-width-responsive="true">